سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

مغرب کی نماز نہیں پڑھی تھی کہ عشاء کی جماعت کھڑی ہوگئی

  • 10364
  • تاریخ اشاعت : 2014-03-02
  • مشاہدات : 378

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

میں مسجد میں داخل ہواتو نماز عشاء کی جماعت کھڑی تھی لیکن نماز شروع کرنے سے پہلے مجھے یاد آیا کہ میں نے تو مغرب کی نماز نہیں پڑھی۔تو کیا اس صورت میں میں پہلے نماز مغرب ادا کروں۔ اور پھر جماعت میں شامل ہوجائوں یا نماز مغرب عشاء کی نماز کے بعد ادا کرلوں؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

جب آپ مسجد میں آیئں اور نماز عشاء کھڑی ہو اور آپ کو یاد آئے کہ آپ نے تو مغرب کی نماز ہی نہیں پڑھی تو اس صورت میں آپ نماز مغرب کی نیت کے ساتھ جماعت میں شامل ہوجایئں جب امام چوتھی رکعت کے لئے اٹھے تو آپ تین پڑھ کر بیٹھیں رہیں انتظار کریں اور جب امام سلام پھیرے تو اس کے ساتھ سلام پھیر دیں اہل علم کے صحیح قول کے مطابق اس صورت میں امام اور مقتدی کی نیت کا اختلاف نقصان د ہ نہیں ہے۔اوراگر آپ اکیلے نماز مغرب ادا کرلیں اور پھر نماز عشاء کا جو حصہ پایئں اسے جماعت سے ادا کرلیں تو اس میں بھی کوئی حرج نہیں۔

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ اسلامیہ

ج1ص409

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ