سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(357) والدین کی طرف سے حج کرو تمہیں ثواب ملے گا

  • 8904
  • تاریخ اشاعت : 2013-12-22
  • مشاہدات : 657

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

ہمارے والدین فوت ہو چکے ہیں اور انہوں نے فریضہ حج ادا نہیں کیا تھا اور نہ اس کی وصیت ہی کی تھی، تو کیا ہم ان کی طرف سے حج کر سکتے ہیں؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

اگر وہ اپنی زندگی میں خوش حال تھے اور حج کی مالی استطاعت رکھتے تھے تو آپ پر واجب ہے کہ ان کے مال سے ان کی طرف سے حج کریں اور اگر آپ اپنے مال سے ان کی طرف سے حج کریں تو آپ کو اس کا اجروثواب ملے گا۔ اور اگر وہ تنگ دست تھے تو پھر آپ کے لیے ان کی طرف سے حج کرنا لازم نہیں ہے یا ان میں سے اگر کوئی ایک تنگ دست تھا تو تنگ دست کی طرف سے حج کرنا لازم نہیں ہے، ہاں البتہ اگر آپ ان کی طرف سے حج کر لیں تو یہ نیکی ہو گی اور آپ کو اس کا اجر عظیم ملے گا۔

 ھذا ما عندي والله أعلم بالصواب

فتاویٰ اسلامیہ

کتاب المناسك: ج 2  صفحہ 264

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ