سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(36) ایک عمرہ کے بعد بار بار طواف کرتےرہنا..الخ

  • 7367
  • تاریخ اشاعت : 2013-10-28
  • مشاہدات : 984

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

جو شخص رمضان المبارک میں عمرہ کے بعد چند دن مکۃ المکرمہ میں مقیم رہا اس کے حق میں تکرار عمرہ افضل ہے یاکہ ایک عمرہ کے بعد بار بار طواف کرتےرہنا۔اسی طرح ایام حج میں اس کے لئے کیا افضل ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

افضل یہی ہے کہ وہ بار بار عمرہ نہ کرے کیونکہ بار بار عمرہ کرنا عہد نبوی اور عہد صحابہ میں معروف نہ تھا بلکہ عمرہ تو ایک مستقل سفر کر کے کیا جاتا ہے اور بار بار طواف بھی نہیں کرنا چاہئے تا کہ جو لوگ اپنے عمرہ یا حج کا طواف کر رہے ہیں ان کے لئے تنگی نہ ہو بلکہ نفلی نماز، قراءت قرآن اور کثرت سے ذکر الٰہی جیسے اعمال میں مشغول رہے جو قرب الٰہی کا زریعہ ہیں۔

 

فتاوی مکیہ

صفحہ 28

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ