سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(904) وتروں میں ’’دعاے قنوت‘‘ رہ جائے تو سجدۂ سہو کریں گے؟

  • 24913
  • تاریخ اشاعت : 2018-03-07
  • مشاہدات : 89

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

وتروں میں ’’دعاے قنوت‘‘ رہ جانے سے سجدۂ سہو ہوتا ہے یا نہیں؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة الله وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

وتروں میں دعائے قنوت میں ذہول (بھولنے) کی صورت میں سجدۂ سہو نہیں۔ قیام اللیل، امام محمد بن نصر مروزی

علامہ البانی تو ویسے ہی بعض دفعہ تَرک کے قائل ہیں۔ یعنی التزام ضروری نہیں۔

  ھذا ما عندي والله أعلم بالصواب

فتاویٰ حافظ ثناء اللہ مدنی

کتاب الصلوٰۃ:صفحہ:756

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ