سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(121) نفاس کے اختتام پر نفاس والی عورت پر و اجب ہونے والا عمل

  • 18969
  • تاریخ اشاعت : 2024-03-03
  • مشاہدات : 702

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

نفاس ختم ہونے پر نفاس والی عورت پر کیا واجب ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

اس پر واجب ہے کہ وہ غسل کرے ،جیسا کہ یہ حائضہ پر واجب ہے ۔اس کے دلائل درج ذیل ہیں:

1۔أمّ سَلَمَةَ قَالَتْ: "كَانَتِ النّفَسَاءُ تَجْلِسُ عَلَى عَهْدِ رَسُولِ الله صلى الله عليه وسلم أَرْبَعِينَ يَوْمًا،[1]

"ام سلمہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا   سے روایت ہے کہ نفاس والی عورتیں  رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم  کے دور میں چالیس دن(نماز روزے سے) بیٹھتی تھیں۔"

2۔كانت المرأة من نساء النبي صلى الله عليه وسلم تقعد في النفاس أربعين ليلة لا يأمرها النبي صلى الله عليه وسلم بقضاء صلاة النفاس [2]

"ام سلمہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا   سے مروی ہے کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم  کی عورتوں میں سے نفاس والی عورت چالیس دن نفاس میں بیٹھتی تھی،نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم  مدت نفاس کی نمازوں کی قضا کرنے کا اس کو حکم نہیں دیتے تھے۔(فضیلۃالشیخ محمد بن صالح العثمین رحمۃ اللہ علیہ )


[1] ۔حسن صحیح سنن الترمذی  رقم الحدیث(139)

[2] ۔حسن سنن ابی داود  رقم الحدیث(312)

ھذا ما عندی والله اعلم بالصواب

عورتوں کےلیے صرف

صفحہ نمبر 146

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ