سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(13) تقلید شخصی کو شرعی حکم سمجھنا

  • 533
  • تاریخ اشاعت : 2012-04-24
  • مشاہدات : 903

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته
تقلیدشخصی کوشرعی حکم سمجھنے والا اہل بدعت سے ہے یانہیں۔ جزاكم الله خيرا


السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

تقلیدشخصی کوشرعی حکم سمجھنے والا اہل بدعت سے ہے یانہیں۔ جزاكم الله خيرا


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد! 

جوشخص تقلیدشخصی کوشرعی حکم سمجھتاہے۔ اس کوامام نہیں بنایاچاہیے ہاں اگرکہیں نماز پڑھا رہا ہوتو اس کے شامل ہونے کی صورت میں نماز ادا ہوجائے گی۔ کیونکہ وہ کافرنہیں زیادہ سے زیادہ تقلیدشخصی کوشرعی حکم سمجھنے کی وجہ سے وہ اہل بدعت میں شمارہوسکتاہے۔ اور اہل بدعت کواگرچہ امام بنانادرست نہیں۔ لیکن کہیں اس کے پیچھے نماز پڑھنے کاموقعہ مل جائے تونماز ہوجائے گی۔ چنانچہ اشتہار امامت مشرک میں اس کی پوری تفصیل کردی ہے۔

 


فتاویٰ ابن باز

جلد اول

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ