سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

دعامانگتے وقت منہ پر ہاتھ پھیرنا

  • 164
  • تاریخ اشاعت : 2024-04-23
  • مشاہدات : 1493

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

دعا مانگنے سے پہلے منہ پر ہاتھ پھیرنا اور دعا کے بعد بھی منہ پر ہاتھ پھیرنا سنت نبوی صلی اللہ علیہ وسلم سے ثابت ہے کہ نہیں ۔؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

سعودی عرب کی مستقل کمیٹی کا فتوی یہ ہے کہ دعا کے بعد منہ پر ہاتھ پھیرنے کے بارے سنن ابن ماجہ اور سنن ترمذی میں جو روایات مروی ہیں ، وہ ضعیف ہیں لہذا یہ کوئی قولی یا فعلی سنت نہیں ہے ۔ پس ایسا نہ کرنا افضل اور اولی ہے۔

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

محدث فتوی

 فتوی کمیٹی

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ