سرچ انجن کی نوعیت:

تلاش کی نوعیت:

تلاش کی جگہ:

(486) بیوی کو لکھ کر طلاق دینا

  • 1944
  • تاریخ اشاعت : 2012-09-03
  • مشاہدات : 1015

سوال

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته
ایک آدمی اپنی بیوی کو لکھ کر طلاق دیتا ہے لیکن وہ طلاق اس کو نہیں پہنچی عورت کی لا علمی کی بنا پر عورت کو طلاق ہوجائے گی کہ نہیں؟

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

ایک آدمی اپنی بیوی کو لکھ کر طلاق دیتا ہے لیکن وہ طلاق اس کو نہیں پہنچی عورت کی لا علمی کی بنا پر عورت کو طلاق ہوجائے گی کہ نہیں؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

اس صورت میں بھی طلاق ہو جاتی ہے اللہ تعالیٰ کا فرمان ہے :

﴿وَإِذَا طَلَّقۡتُمُ ٱلنِّسَآءَ فَبَلَغۡنَ أَجَلَهُنَّ﴾--بقرة232

’’اور جب تم طلاق دو عورتوں کو پس وہ پہنچ جائیں اپنی مدت کو‘‘

وباللہ التوفیق

احکام و مسائل

طلاق کے مسائل ج1ص 334

محدث فتویٰ

ماخذ:مستند کتب فتاویٰ