فتاویٰ جات: علاج ومعالجہ
فتویٰ نمبر : 8397
بارش کے پانی سے علاج
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 28 November 2013 09:27 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیا بارش کے پانی پر چاروں قل یا کوئی دعا پڑھ کر پینے کی کوئی روایت حضرت عمر رضی الله عنه سے ثابت ہے، کیا بارش کے پانی پر دم کر کے پینے سے بیماری کا علاج ہو تا ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

اللہ تعالی نے ہر زندہ چیز کو پانی سے پیدا فرمایا ہے،پانی خواہ بارش کا ہو یا دوسرا ہو ،اس میں متعدد فوائد پائے جاتے ہیں،اور حکماء کے ہاں پانی بے شمار بیماریوں کا علاج ہے، انسان کھائے بغیر تو زندہ رہ سکتا ہے مگر پانی کے بغیر زندہ رہنا ناممکن ہے۔ انسانی جسم میں پانی کی شرح خون میں تقریباً 95% ہے۔ جس کا ہر عضوپانی کا محتاج ہے۔۔باقی آپ نے جس روایت کا تذکرہ کیا ہے ایسی کوئی روایت ہمارے علم میں نہیں ہے،اس معنی کی ایک روایت شیعہ کے مصادر میں پائی جاتی ہے ،جس کا حقیقت کے ساتھ کوئی تعلق نہیں ہے۔ہاں البتہ آب زمزم ایک ایسا پانی ہے جس کے بارے میں نبی کریم ﷺ نے فرمایا کہ یہ جس نیت سے پیا جائے ،وہ پوری ہو جاتی ہے۔

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتوی کمیٹی

محدث فتوی



تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)