فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 8153
(259) نامناسب اعمال سے جسم کی حفاظت
شروع از بتاریخ : 12 November 2013 10:20 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیا آنکھ کا گناہ زیادہ سخت ہے یا منہ کا؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

بعض اوقات منہ سے کیا ہوا عمل آنکھ سے کئے ہوئے عمل سے بد تر اور بڑا گناہ ہوتا ہے۔ منہ سے شرک بھی سرزد ہوسکتا ہے جو اللہ تعالیٰ کی نافرمانی پر مشتمل سب سے بڑا گناہ ہے۔ اسی طرح اللہ تعالیٰ کے متعلق بغیر علم کے (سنی سنائی غلط سلط باتیں کہنا) بھی بڑا گناہ ہے‘ اس کے علاوہ بھی زبان کے کبیرہ گناہ معروف ہیں۔ جناب رسول اللہ ﷺ کی صحیح حدیث ہے کہ آپ ﷺ نے فرمایا:

(أَکْثَرُ مَا یُدْخلِ النَّاسَ النَّارَ الَّا جْوَفَانِ الْفَرْجُ وَالْقَمُ)

’’لوگوں کو جہنم میں سب سے زیادہ دو چیزیں لے جائیں گی’’شرمگاہ اور منہ‘‘ 1

-------------------------------------------------------

1 حدیث میں ’’اجوفان‘‘ کا لفظ ہے۔ جس کامطلب ہے وہ چیز او اندر سے خالی ہو۔ مسند احمد ج:۲‘ ص:۲۹۱‘ ۳۹۲‘ ۴۴۲۔ سنن ابن ماجہ حدیث نمبر: ۳۴۰۰

 

 

فتاوی بن باز رحمہ اللہ

جلددوم -صفحہ 112

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)