فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 8140
کافر کو کافر کہ نے کا وجوب
شروع از بتاریخ : 12 November 2013 09:54 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

ہم اس شخص کے بارے میں شرعری حکم معلوم کرنا چاہتے ہیں جو کافر کوکافر نہیں کہتا۔


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

جس شخص کا کفر ہونا ثابت ہوجائے‘ اس کو کافر سمجھنا اور اس پر کفر کا حکم لگانا واجب ہے اور مسلمان حاکم کا فرض ہے کہ اگر ایسا شخص تو بہ نہ کرے تو اس پر ارتداد کی شرعی حد نافذ کرے۔ جس شخص کا کافر ہونا ثابت ہوچکا ہو اس کو کافر نہ سمجھنے والا بھی کافر ہے۔ البتہ اگر وہ کسی شبہ کی وجہ سے یہ موقف رکتھا ہے تو اس شبہ کا ازالہ کرنا ضروری ہے۔

وَبِاللّٰہِ التَّوْفِیْقُ وَصَلَّی اللّٰہُ عَلٰی نَبِیَّنَا مُحَمَّدٍ وَآلِہ وَصَحْبِہ وَسَلَّمَ

اللجنة الدائمة۔ رکن: عبداللہ بن قعود، عبداللہ بن غدیان، نائب صدر: عبدالرزاق عفیفی، صدر عبدالعزیز بن باز

فتویٰ (۴۲۵۲)

 

 

فتاوی بن باز رحمہ اللہ

جلددوم -صفحہ 97

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)