فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 8123
(229) جھوٹ اور دھوکے سے امریکہ کا گرین کارڈ حاصل کرنا
شروع از بتاریخ : 12 November 2013 09:17 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

امریکہ میں ایک نظام ہے جسے ’’گرین کارڈ‘‘ کا نظام کہتے ہیں۔ اس کا مطلب ہے کسی غیر ملکی کا ریاستہائے متحدہ امریکہ میں مستقل رہائش اختیار کرنا۔ گرین کارڈ مندرجہ ذیل صورتوں میں مل سکتا ہے۔

(الف)   کوئی شخص یہ ثابت کر دے کہ وہ اپنے ملک کے سیاسی حالات کی وجہ سے وہاں نہیں رہ سکتا۔

(ب)     یا وہ کسی امریکی عورت سے شادی کرلے۔

سائل عرض کر تا ہے کہ ’’میں نے جھوٹ بول کر حیلے بہانے سے یہ ثابت کر دیا کہ میں شق (الف) میں شامل ہوں۔ اس طرح مجھے امریکہ میں مستقل رہائش مل گئی۔ اس کے علاوہ امریکہ حکومت مجھے یونیورسٹی میں زیرتعلیم ہونے کی بنا پر نقد امداد بھی دیتی ہے۔ میں غریب آدمی ہوں اور اپنے بارے میں فتویٰ چاہتا ہوں۔

اولاً:       میں نے جھوٹ بول کر اپنے آپ کو غریب اور ضرورت مند ثابت کیا۔ مقصد یہ تھا کہ میں یہاں تعلیم جاری رکھ سکوں۔

ثانیاً:      میں اس بارے میں شرعی حکم معلوم کرنا چاہتا ہوں کہ مجھے جو رقم ملتی ہے وہ حرام ہے یا حلال؟ اور اب میں کیا کروں جبکہ میں حکومت امریکہ کی اس امداد کے بغیر گزاربھی نہیں سکتا؟

الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

مسلمان کے لئے غیر مسلم ملک کی شہریت اختیارکرنا حرام ہے۔

جھوٹ بولنا حرام ہے۔ اس کے متعلق قرآن وحدیث کے بہت سے دلائل موجود ہیں۔ مثلاً ارشاد ربانی تعالیٰ ہے:

{یٰٓاَیُّہَا الَّذِیْنَ اٰمَنُوا اتَّقُوا اللّٰہَ وَکُوْنُوْا مَعَ الصّٰدِقِیْنَ}

’’اے مومنو! اللہ سے ڈرو اور سچے لوگوں کے ساتھ ہوجاؤ‘‘

اور ارشاد رسول اکرم ﷺ ہے:

(أِیَّاکُمْ وَالْکَذِبَ فَأِنَّ الْکَذِبَ یَھْدِی أِلَی الْفُجُورِ وَالْفُجُورُ یَھْدِی أِلَی النَّارِ)

’’جھوٹ سے بچو‘ کیونک جھوٹ گناہ کی طر ف لے جاتا ہے اور گناہ جہنم کی طرف لے جاتا ہے‘‘

یہ حدیث بخاری اور مسلم نے روایت کی ہے1

اس حیلہ اور جھوٹ کے ذریعہ ان سے مال لینا حرام ہے اور جو لیا جاچکا ہے اسے واپس کرنا واجب ہے‘اگر جس سے لیا ہے اسے واپس کرنا ممکن نہ ہوتو‘ واجب ہے کہ غریبوں پر خرچ کردیا جائے یا کسی خیراتی پروگرام میں لگا دیا جائے اور اللہ تعالیٰ کے حضور توبہ کی جائے۔

وَبِاللّٰہِ التَّوْفِیْقُ وَصَلَّی اللّٰہُ عَلٰی نَبِیَّنَا مُحَمَّدٍ وَآلِہ وَصَحْبِہ وَسَلَّمَ

اللجنة الدائمة۔ رکن: عبداللہ بن قعود، عبداللہ بن غدیان، نائب صدر: عبدالرزاق عفیفی، صدر عبدالعزیز بن باز

فتویٰ(۲۴۹۵)

-------------------------------------------

1 صحیح بخاری حدیث نمبر: ۶۰۹۴۔ صحیح مسلم حدیث نمبر: ۲۶۰۶

 

 

فتاوی بن باز رحمہ اللہ

جلددوم -صفحہ 78

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)