فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 722
(927) اذان کےوقت السلام علیکم کا جواب
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 17 May 2012 10:25 AM

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

اذان یا خطبہ کےوقت السلام علیکم کہنا جائز ہے یا نہیں۔؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد! 

خطبہ میں السلام علیکم کہہ دے تو کوئی حرج نہیں۔ کیونکہ اس کے جواب سے خطبہ کا سماع فوت نہیں ہوتا۔ پھر اشارہ بھی جواب ہو سکتا ہے۔ رہا اذان کے وقت السلام علیکم تو اس کےجواب میں بھی کوئی شبہ نہیں کیونکہ اذان کے جواب کا ذکر آیا ہے۔ اذان کے سماع میں اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا کیونکہ مؤذن کھینچ کرالفاظ کہتاہے۔

وباللہ التوفیق

قرآن وحدیث کی روشنی میں احکام ومسائل

جلد 01 


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)