فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 6943
بچے پیدانہ ہونے کی دوائی استعمال کرنا جائز ہے؟
شروع از بتاریخ : 16 September 2013 10:22 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

ایک عورت کی عمر تقریباً 37 سال کی ہے۔ شادی کی قریبا 22 سال ہوئے اس عرصہ میں عورت کو 13 بچے ہوئے۔ اب عورت حاملہ ہے۔ یہ عمل تولد ہوجانے کے بعدبچے پیدانہ ہونے کی دوائی استعمال کرسکتی ہے۔ عورت کی حالت بہت کمزور ہے۔ اگردوا مذکور استعمال کرنی ناجائز ہے تو کیا عورت اپنے شوہرسے جدا رہ سکتی ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

بچہ گرانے یا بچے کی پیدائش روکنے سے حدیثوں میں منع آیا ہے۔ بوجہ عذر خاوند سے جدا رہ سکتی ہے۔ (اہلحدیث امرتسر 3 زو الحجہ 1364ہجری)

 

فتاویٰ ثنائیہ

جلد 2 ص 281

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)