فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 688
(153) ہندؤوں کوتہواروں میں مٹی کے برتن بناکردینا
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 12 May 2012 04:32 PM

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

ایک شخص کمہارہے ۔تمام گاؤں میں اسی کی سیپی ہے ۔ہرطرح کے برتن بناکرلوگوں کودیتاہے اب عرض ہے کہ ہندوکے تہواروں میں بعض برتن مستعمل ہوتےہیں ۔جیسے دیوالی میں چراغ جلائے جاتےہیں ۔کیاشریعت محمدی میں ایسافعل جائز ہے۔؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد! 

بلوغ المرام میں حدیث ہے ۔جوشخص انگور روک رکھے تاکہ ایسے لوگوں کےپاس فروخت کرے گاجوان کی شراب بنائیں ۔تووہ  دیدہ دانستہ آگ میں داخل ہوگیا۔(بلوغ المرام کتابالبیوع 2 64)اس سے معلوم ہواکہ دیوالی کی خاطربرتن بنانا اور ہنودکے پاس فروخت کرناجائز نہیں۔

وباللہ التوفیق

فتاویٰ اہلحدیث

کتاب الطہارت، پانی کا بیان، ج1ص242 

محدث فتویٰ



تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)