فتاویٰ جات: خواتین واطفال
فتویٰ نمبر : 6760
عورتوں کو خط وکتابت سکھانے کا کیا حکم ہے؟
شروع از بتاریخ : 02 September 2013 10:07 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

عورتوں کو خط وکتابت سکھانے کا کیا حکم ہے۔ جائز ہے یا منع؟

(عبد الرحمٰن از کلکتہ)


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

جو کام مردوں کو جائز ہے۔  وہ عورتوں کو بھی جائز ہے۔ یہ تو ہے عام دلیل خاص یہ ہے کہ آپ ﷺنے ایک عورت کو فرمایا۔ تو نے حفصہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا  کو جس طرح لکھنا سکھایا ہے۔ گرم دانوں (پت) کا علاج بھی سکھا دے۔ ثابت ہوا کہ کتابت سکھانی جائز ہے۔

نوٹ

اس مضمون پر ایک مختصرسا رسالہ مصنفہ مولانا شمس الحق ڈیانوی کتاب سبل السلام مطبوعہ دہلی کے  ساتھ ملحق ہے۔ (1 1مارچ 1932ء)

 

فتاویٰ  ثنائیہ

جلد 2 ص 102

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)