فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 674
(139) پانی میں پاک شئے گرکررنگ ،بویامزاکابدلنا
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 12 May 2012 01:05 PM

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

پانی میں پاک شئے پڑجائے اوراس کارنگ ،بویامزہ بدل جائے کیااس پانی سے غسل و وضوء ہوسکتاہے ۔؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد! 

پانی میں پاک شئے پڑنے سے بعض دفعہ اس کانام اورہوجاتاہے ۔مثلاشربت یاعرق  یالسی وغیرہ تواس سے وضوء اورغسل نہیں ہوگا۔ہاں اگرپانی کانام نہ بدلے جیسے کنوئیں میں پتے گرنے سے رنگ،بویامزابدل جاتاہے مگراس کانام پانی ہی رہتاہے ۔دوسرانام اس پرنہیں بولاجاتا۔اس لیے اس سے وضوء غسل وغیرہ بالاتفاق درست ہے ۔

وباللہ التوفیق

فتاویٰ اہلحدیث

کتاب الطہارت’پانی کا بیان، ج1ص235 

محدث فتویٰ 



تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)