فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 661
(125) روح پاک ہے یا پلید؟
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 07 May 2012 03:51 PM

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

روح پاک چیز ہے یاپلید؟اگرپاک ہے تو کافروں کونجس کیوں کہاگیا؟ کیونکہ ان میں بھی روح ہے۔ اگرپلیدہے توپاک کوئی بھی نہیں؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد! 

حدیث میں ہے :

«کل مولودیؤلدعلی الفطرۃ فابواہ یہودانہ اوینصرانہ اویمجسانہ»

ترجمہ :۔’’ہربچہ اسلام پرپیداہوتاہے پھراس کے ماں باپ یہودی بناتے ہیں یانصرانی یامجوسی۔

قرآن مجیدمیں بھی اس کاارشارہ موجودہے ۔ارشادہے :

﴿فِطۡرَتَ ٱللَّهِ ٱلَّتِي فَطَرَ ٱلنَّاسَ عَلَيۡهَاۚ لَا تَبۡدِيلَ لِخَلۡقِ ٱللَّهِۚ﴾--سورة الروم30

ترجمہ :۔’’اللہ تعالیٰ کی وه فطرت جس پر اس نے لوگوں کو پیدا کیا ہے، اللہ تعالیٰ کے بنائے کو بدلنا نہیں،‘‘

اس آیت وحدیث سے معلوم ہواکہ پیدائش کے وقت روح پاک ہوتی ہے پھرشرک سے نجس ہوجاتی ہے ۔

وباللہ التوفیق

فتاویٰ اہلحدیث

کتاب الایمان، مذاہب، ج1ص175 

محدث فتویٰ



تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)