فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 658
(122) تلیغ کی حد
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 07 May 2012 03:36 PM

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

تبلیغ کس حدتک ہونی چاہیئے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد! 

تبلیغ کی حداستطاعت ہے جتنی طاقت ہوکرے۔ جن قوموں کودعوت پہنچی ہے ان کوتبلیغ ضروری نہیں۔کیونکہ رسول اللہﷺکئی قوموں شبخونی کرتے اور اس وقت تبلیغ  نہ کرتے ۔

وباللہ التوفیق

فتاویٰ اہلحدیث

کتاب الایمان، مذاہب، ج1ص164 

محدث فتویٰ



تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)