فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 616
(80) لوح محفوظ
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 29 April 2012 01:52 PM

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

لوح محفوظ کون سے آسمان پرہے اورکس چیز کی بنی ہوئی ہے ۔عرش عظیم کےاوپرہے یانیچے ہے ؟ا زراہِ کرم کتاب وسنت کی روشنی میں جواب دیں جزاكم الله خيرا


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد! 

بخاری باب قول اللہ تعالی:

 ﴿بَلۡ هُوَ قُرۡءَانٞ مَّجِيدٞ - فِي لَوۡحٖ مَّحۡفُوظِۢ ﴾--سورة المعارج21-22

 میں ہے

«عن ابی ہریرۃ عن النبی صلی اللہ علیہ وسلم قال لماقضی اللہ اللہ الخلق کتب کتاباعندہ غلبت اوقال سبقت رحمتی غضبی وہوعندہ فوق العرش ۔»

’’یعنی رسول اللہﷺ نے فرمایا۔جب اللہ تعالی نے مخلوق کوپیداکرنے کافیصلہ کیا توایک کتاب لکھی کہ میری رحمت میرے غضب پرغالب آگئی وہ کتا ب اللہ تعالی کے پاس عرش کے اوپرہے۔

فتح الباری میں اس حدیث کی وضاحت کرتے ہوئے لکھاہے:

«والعرش منہ الاشارۃ الی ان اللوح المحفوظ فوق العرش»

 (فتح الباری جز3 ص 795)

 یعنی اس حدیث سےامام بخاری ؒ کی غرض یہ ہے کہ یہ کتاب لوح محفوظ ہے اورعرش کے اوپرہے ۔

تفسیرابن کثیرمیں ابن عباس﷜ سے روایت ہے کہ لوح محفوظ سفیدموتی ہے جس کا طول آسمان  وزمین کے فاصلے کے برابرہے اورعرض مشرقی اورمغرب کے فاصلے کے برابرہے اس کے کنارے موتی اوریاقوت کے ہیں۔ اس کےپٹھے۔(گتے )کے ساتھ بندہے اور اس کااصل فرشتہ کے آگے ہے۔ مقاتل ؒ سے روایت ہے کہ عرش کے دائیں طرف ہے۔ ابن عباس﷜ سے مرفوع  روایت ہے کہ لوح محفوظ سفیدموتی کی ہے اس کے صفحات سرخ یاقوت کے ہیں۔ اس کاقلم اور اس کا نوشتہ نورہے۔ ہردن اللہ تعالی اس میں چھتیس مرتبہ نظرکرتاہے۔ کسی کوپیداکرتاہے۔ کسی کورزق دیتاہے ۔کسی کو مارتاہے ۔کسی کو زندہ کرتاہے ۔کسی کوغربت دیتاہے ۔کسی کوذلت۔جوچاہتاہے کرتاہے ۔ابن کثیرجلد10ص 201یمحواللہ مایشاء ویثبت ابن کثیرجلد5ص 271

وباللہ التوفیق

فتاویٰ اہلحدیث

کتاب الایمان، مذاہب، ج1ص160 

محدث فتویٰ



تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)