فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 595
(59) کسب اورخلق میں فرق
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 26 April 2012 11:55 AM

السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کسب اورخلق میں کیافرق ہے ؟ جزاكم الله خيرا


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!

الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد! 

خلق نیست سے ہست کرنا اور عدم سے وجود لانا۔ کسب کسی امر کا قصد اور ارادہ کرنا اور اس کے قصد ارادے کے مطابق خدا تعالی کا اس کے اعضاء میں حرکت پیدا کردینا۔

کسب میں کچھ احتیاجی کا بھی شائبہ ہے یعنی کسی اپنی کمی اور ضرورت کو پورا کرنے کے لیے یہ قصد ارادہ ہوتا ہے اس لیے اس کی نسبت بندے کی طرف ہوتی ہے خدا کی طرف نہیں ہوتی۔

وباللہ التوفیق

فتاویٰ اہلحدیث

کتاب الایمان، مذاہب، ج1ص137 

محدث فتویٰ



تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)