فتاویٰ جات: معاشرت
فتویٰ نمبر : 5837
بیوی کی دبر میں وطی کرنے کا گناہ
شروع از بتاریخ : 13 July 2013 10:51 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

سوال۔اگر کوئی شخص اپنی بیوی کی دبر میں جماع کر لیتا ہے تو اس کا کیا گناہ ہے۔؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

بیوی کی دبر میں جماع کرنا حرام اور ملعون عمل ہے ،نبی کریم نے فرمایاۛ

" ﴿مَلْعُونٌ مَنْ أَتَى امْرَأَتَهُ فِی دُبُرِهَا ﴾سنن أبی داود کتاب النکاح باب فی جامع النکاح حدیث نمبر 2162

جو شخص اپنی بیوی سے دبر میں جماع کرے وہ ملعون (لعنت زدہ) ہے۔

ایسا کرنے والے شخص پر لازم ہے کہ وہ اللہ تعالی سے پکی پکی توبہ کرے اور دوبارہ اس ملعون فعل کو نہ دہرائے۔

ھذا ما عندی واللہ أعلم بالصواب

محدث فتوی

فتوی کمیٹی



تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)