فتاویٰ جات
فتویٰ نمبر : 5641
(338) ایک شخص نے دھوتی پہنے ہوئے وضو کیا..الخ
شروع از بتاریخ : 06 July 2013 08:16 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیا فرماتے ہیں علمائے دین اس مسئلہ میں  کہ ایک شخص نے دھوتی پہنے ہوئے وضو کیا اور بعد فارغ ہونےکے دھوتی اس کی ہوا سے اُڑ کر کاندھے پرجاپڑی اور جانگ کھل گئی، اب عرض یہ ہے کہ جانگ کے کھل جانے سے وضو اس کا باطل ہوا یا نہیں، فقط  بینوا توجروا


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

صورت مسئولہ میں  دھوتی کے کھل جانے سے وضو نہیں ٹوٹتا، چنانچہ صحیح  بخاری میں  ہے ۔ الا تغطوا است قارئکم الحدیث جب کہ چوتڑ کے کھل جانے سے وضو نہیں ٹوٹتا تو جانگ کے کھل جانے سے بدرجہ اولےٰ نہیں ٹوٹے گا ،فتح الباری میں  ہے ، وکذا من[1] استدل بہ بان ستر العورۃ فی الصلوٰۃ لیس شرطا لصحہا بل ھو سنۃ و اللہ اعلم بالصواب۔ حررہ عین الدین عفی عنہ۔     (سید محمد نذیر حسین)



[1]   اس سے  یہ استدلال بھی کیا جاسکتا ہے کہ ستر عورت صحت نماز کے لیے شرط نہیں ہے۔


فتاویٰ علمائے حدیث

جلد 05 


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)