فتاویٰ جات: علاج ومعالجہ
فتویٰ نمبر : 26458
(810) آسیب زدہ کے علاج کا طریقہ
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 28 April 2018 10:01 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

ایک آدمی پر آسیب کا اثر ہے ، اسے جب دورہ پڑتا ہے تو وہ جس پر خفا ہوتا ہے ، اسے مارنے کے لیے جان توڑ کوشش کرتا ہے ، جب اُسے دورہ پڑے تو اُس وقت کیا علاج کیا جائے؟ (سائل) (۲۱ مئی ۲۰۰۴ئ)


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة الله وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

سورۃ فاتحہ پڑھ کر دم کرنا چاہیے۔ تحفۃ الذاکرین،ص:۲۴۵

     ھذا ما عندی والله اعلم بالصواب

فتاویٰ حافظ ثناء اللہ مدنی

جلد:3،متفرقات:صفحہ:556

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)