فتاویٰ جات
فتویٰ نمبر : 2490
ایک مسجد میں جمعہ ہو رہا ہے کچھ لوگ اس تھوڑی دیر الگ جا کر مسجد تعمیر کرتے ہیں اور جامع مسجد قرار دینا چاہتے ہیں
شروع از بتاریخ : 16 February 2013 08:11 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

ایک مسجد میں مدت سے جمعہ ہو رہا ہے، کچھ لوگ تھوڑی دور الگ مسجد بنا کر اسے جامع مسجد قرار دینے کا مطالبہ کرتے ہیں۔ کیا یہ درست ہے؟

______________________________________________________

الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

 اگر اس میں انتقال جمعہ میں کوئی فساد یا ضد نہیں ہے تو دوستوں کو باہمی طور پر فیصلہ کر لینا چاہیے صرف ضد یا تعصب کی آڑ میں یہ مطالبہ نہیں کرنا چاہیے، پہلی مسجد اگر چھوٹی یا آبادی سے دور ہے اور نئی مسجد بڑی ہے۔ تو اس کی سہولتوں سے فائدہ اٹھانے میں کوئی ہرج نہیں، جمعہ کی تبدیلی اجتماع کی ضروریات کے مطابق ادھر ادھر کی جا سکتی ہے۔ (اہل حدیث سوہدرہ جلد نمبر ۱۳ ش نمبر ۸)

فتاویٰ علمائے حدیث

کتاب الصلاۃجلد 1 ص 93
محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)