فتاویٰ جات
فتویٰ نمبر : 2486
(109) ایک مسجد تین منزلہ ہے تو کیا اس کے ہر حصے میں نماز مساوی ہے یا نیچے افضل ہے؟
شروع از بتاریخ : 16 February 2013 08:06 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

ہماری مسجد سہ منزلہ ہے۔ حسب موسم کبھی سب سے اوپر کی منزل میں نماز باجماعت ادا کی جاتی ہے۔ اور کبھی بیچ والی منزل میں، کبھی نیچے کی منزل میں، ایک صاحب فرماتے ہیں، کہ صرف پہلی منزل میں جماعت و جمعہ ہونا چاہیے، اسی میں افضلیت ہے، دوسری اور تیسری منزل میں جماعت نہیں ہو سکتی لہٰذا آپ سے دریافت ہے کہ کیا شرعاً پہلی منزل کی کوئی خاص فضیلت و امتیاز ہے کہ اسی میں نماز پڑھی جائے یا تینوں منزلوں میں نماز یکساں ہو گی؟

_______________________________________________________________

الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

مسجد کی تینوں منزلیں مساوی ہیں، ہر ایک منزل میں نماز جمعہ و جماعت یکساں ادا ہو گی ایک منزل کو دوسر ی پر کوئی فوقیت و فضیلت نہیں ہے۔ صحیح بخاری شریف میں ہے، حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ نے مسجد کی چھت پر امام کے ساتھ نماز فرض ادا کی تھی۔ (مولانا) محمد یونس دہلوی ، اہل حدیث گزٹ دہلی جلد نمبر ۸ ش نمبر ۲۱)

فتاویٰ علمائے حدیث

کتاب الصلاۃجلد 1 ص 90
محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)