فتاویٰ جات
فتویٰ نمبر : 2461
(84) غیر مسلم کی بنائی ہوئی مسجد میں نماز کا حکم
شروع از بتاریخ : 16 February 2013 07:38 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

غیر مسلم کی بنائی ہوئی مسجد میں نماز درست ہے یا نہیں ، جب کہ اس نے بنا کر مسلمانوں کو ہبہ کر دیا ہو۔

_________________________________________________________

الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

غیر مسلم کی بنائی ہوئی مسجد میں جبکہ اس نے مسلمانوں کو ہبہ کر دیا ہو نماز جائز ہے۔ کیوں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ہے، سوائے مخصوص جگہوں کے تمام روئے زمین میں نماز درست ہے (بخاری)  جعلت لی الأرض مسجداً۔ یہ حدیث بخاری شریف کی ہے، اس میں آنحضور صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ اللہ تعالیٰ کی طرف سے روئے زمین کو میرے لیے سجدہ گاہ بنایا گیا ہے۔ (اہل حدیث دہلی جلد نمبر۸، ش نمبر ۲۳)

فتاویٰ علمائے حدیث

کتاب الصلاۃجلد 1 ص 57
محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)