فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 239
خودکشی کرنے والے کی سزا
شروع از بتاریخ : 06 December 2011 01:53 PM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیا خو دکشی کرنے والا شخص ہمیشہ کے لیے جہنم میں رہے گا۔فرض کریں ایک شخص کسی کو گولی مار رہا ہو دوسرا اس کو بچانے کے لیے آگے آ جائے اور گولی اسے لگ جائے تو کیا دوسرے نے خودکشی کی۔؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

شرک اور کفر کے علاوہ کسی بھی گناہ کی سزا ہمیشہ کی جہنم نہیں ہے۔ خود کشی کرنے والا کافر اور مشرک نہیں ہے لہذا ہمیشہ جہنم میں نہیں رہے گا بلکہ ایک مدت کے بعد نکال لیا جائے گا۔

فرض کریں ایک شخص کسی کو گولی مار رہا ہو دوسرا اس کو بچانے کے لیے آگے آ جائے اور گولی اسے لگ جائے تو کیا دوسرے نے خودکشی کی۔؟

نہیں یہ خود کشی نہیں ہے،بلکہ قتل خطا ہے۔

ھذا ما عندی واللہ أعلم بالصواب

محدث فتوی

فتوی کمیٹی


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)