فتاویٰ جات
فتویٰ نمبر : 2384
(267) کیا جادو کا جادو سے علاج کیا جا سکتا ہے؟
شروع از بتاریخ : 30 January 2013 10:24 AM
 السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیا جادو کا علاج جادو سے کیا جاسکتا ہے؟

_________________________________________________________________

الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

جی نہیں۔

رسو ل اللہ ﷺ نے فرمایا: ’’ سات مہلک کاموں سے بچ کر رہو۔ ‘‘ صحابہ نے عرض کی: یا رسول اللہﷺ! وہ سات کام کون کون سے ہیں؟ آپﷺ نے فرمایا:

1۔   اللہ تعالیٰ کے ساتھ شرک کرنا۔                                             2۔ جادو کرنا ۔

3۔           کسی کو ناحق قتل کرڈالنا۔                                            4۔       سود خوری ۔

5۔            یتیم کا مال کھانا۔                                                       6۔             کفار سے مقابلہ کے دن پیٹھ پھیر کر بھاگ جانا۔

7۔           پاکدامن اہل ایمان عورتوں پر تہمت لگانا۔

صحیح بخاري، کتاب الوصایا. باب قول الله تعالی:

﴿إِنَّ الَّذِينَ يَأْكُلُونَ أَمْوَالَ الْيَتَامَىٰ ظُلْمًا إِنَّمَا يَأْكُلُونَ فِي بُطُونِهِمْ نَارً‌ا ۖ وَسَيَصْلَوْنَ سَعِيرً‌ا (١٠

فتاویٰ علمائے حدیث

کتاب الصلاۃجلد 1 

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)