فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 20681
(511) قریب الموت کے پاس سورت یٰسین پڑھنا
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 09 April 2017 10:38 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

مردے کے پاس سورہ یٰسین کی تلاوت کرنا ،احادیث سے ثابت ہے یا نہیں؟وضاحت سے جواب دیں۔


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة الله وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

میت کے پاس سورہ یٰسین پڑھنے کے متعلق کوئی حدیث صحیح نہیں ہے،اس سلسلہ میں ضعیف احادیث مروی ہیں،حضرت معقل بن یسار رضی اللہ تعالیٰ عنہ  سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم  نے فرمایا:"اپنے مرنے والوں کے قریب سورہ یٰسین پڑھا کرو۔"

یہ روایت ضعیف ہے ،علامہ البانی رحمۃ اللہ علیہ  نے اسے ضعیف ابی داود میں بیان کیا ہے(حدیث:683)ایک روایت  میں یہ الفاظ ہیں کہ جس مردے کے پاس سورہ یٰسین کی تلاوت کی جاتی ہے اللہ تعالیٰ اس پر آسانی فرمادیتے ہیں۔

علامہ ذہبی رحمۃ اللہ علیہ  نے اسے بیان کرکے بتایا ہے کہ اس میں مروان بن سالم راوی  ثقہ نہیں ہے۔اس لیے اس عمل سے اجتناب کرنا چاہیے۔(واللہ اعلم)

ھذا ما عندی والله اعلم بالصواب

فتاویٰ اصحاب الحدیث

جلد3۔صفحہ نمبر 427

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)