فتاویٰ جات: معاملات
فتویٰ نمبر : 174
موبائل میسج کے ذریعہ سے آیات و احادیث سینڈ کرنا
شروع از بتاریخ : 06 December 2011 09:32 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیا موبائل سے ایس ایم ایس کے ذریعے قرآن و حدیث لکھ کر بھیجے جاسکتے ہیں رومن انگریزی میں جبکہ کہ بھیجنےوالے  کی نیت خالص اسلامی پیغام کو عام کرنا ہو۔؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

آپ آیت یا حدیث کا ترجمہ تو لکھ کر فاورڈ کر سکتے ہیں لیکن کسی آیت یا حدیث کا متن رومن اردو میں لکھ کر فارورڈ نہ کریں۔ قرآن مجید تو اس لیے کہ اس کو بغیر رسم عثمانی کے لکھنا ممنوع ہے اور اس پر امت کا اتفاق ہے جبکہ حدیث کو عربی رسم کے بغیر لکھنے میں اس میں تحریف کے امکانات نکلتے ہیں۔

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

محدث فتوی

فتوی کمیٹی


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)