فتاویٰ جات
فتویٰ نمبر : 16505
(49)حدیث سجدہ شمس تحت العرش...
شروع از Rafiqu ur Rahman بتاریخ : 09 May 2016 09:51 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

حدیث : ’’ شفعت الملائکة وشفع النبيون...کی وضاحت


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

سجدہ شمس تحت العرش (بخاری کتاب بدع بدء الخلق باب صفة الشمس والقمربحسبان 4/74، وکتاب التفسیر باب قوله تعالی : (والشمس تجری لمستقرلھا ذلک تقدیر العزیز العلیم ) 6/30)والی حدیث پرحافظ اور عینی اور علامہ آلوسی بغدادی نے’’ روح المانی ،، میں کچھ لکھا ہےاس سےزائد اوراس کےعلاوہ کوئی جدید تحقیق میرے سامنے نہیں ہے اور سب تحقیقات آپ کےسامنے ہیں۔اس لیے ان کےلکھنے کےضرورت بھی نہیں۔امام  ابن تیمیہ اورابن القیم کی اس کے متعلق کوئی تحریر پرمیری نظر نہی گزری۔ تلاش وجسجوجاری رکھوں گا ۔أوصلنى الله إلى الله مااتمناه-

  عبيدالله الرحمانى  مباركپوری (مکتوب بنام مولانا عبداللہ الجبار کھنڈیلوی)

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ شیخ الحدیث مبارکپوری

جلد نمبر 1

صفحہ نمبر 144

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)