فتاویٰ جات: تعلیم وتعلم
فتویٰ نمبر : 14265
مسلمان طالب علم کا غیر مسلم ملک میں علم حاصل کرنا
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 25 August 2015 02:07 PM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیا ایک مسلمان طالب علم کسی غیر مسلم ملک میں غیر ملکی وظیفے پر علم حاصل کرسکتا ہے۔؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

اس میں بنیادی چیز دیکھنے کی یہ ہے کہ اگر تو وہ طالب علم اس غیر مسلم ملک میں جا کر اپنے دین اور ایمان وعقیدے کی حفاظت کر سکتا توکسی حد تک وہاں تعلیم حاصل کرنے کی گنجائش نظر آتی ہے۔اور اگر وہاں جا کر اس کے فتنے میں پڑنے کا اندیشہ ہو،یا ایمان اور عقیدے میں بگاڑ پیدا ہونے یا اس کے ختم ہونے کا ڈر ہو (جیسا کہ اکثر ہوتا ہے) تو پھر ایسی حالت میں کسی غیر مسلم ملک میں جا کر تعلیم حاصل کرنا جائز نہیں ہوگا۔

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتوی کمیٹی

محدث فتوی



تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)