فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 13882
(47) کھٗڑے ہو کر پیشاب کرنا گناہ ہے؟
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 25 February 2015 10:07 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کھڑے ہوکر پیشاب کرنا گناہ ہے یا نہیں؟ حضور پاکﷺ نے اس کے متعلق کیافرمایا ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

کسی عذر اور مجبوری کے بغیر کھڑے ہوکر پیشاب کرناجائز نہیں۔ حضرت عمرؓ سے روایت ہے کہ رانی رسول الله ﷺ وانا ابول قائما فقال یاعمر لاتبل قائما فما بلت قائما بعد (ترمذی ج۱ ابواب الطھارۃ ص۴) رسول اللہ ﷺ نے مجھے کھڑے ہوکے پیشاب کرتے دیکھا تو آپﷺ نے مجھے منع کیا ۔ اس کے بعد میں نے کبھی کھڑے ہوکر پیشاب نہیں کیا۔ عذر کی شکل میں رسول اکرمﷺ سے بھی کھڑے ہوکر پیشاب کرنے کا بعض روایات میں ذکر آتا ہے اس لئے بیماری یا کسی دوسری مجبوری کی وجہ سے کھڑے ہوکے پیشاب کرناجائز ہے بعض اوقات ایسے بھی ہوتا ہے کہ بیٹھ کرکرنے سے صفائی نہیں رہ سکتی جب کہ ایسے مقامات پر کھڑا ہو کر کرنے سے گندگی سے محفوظ رہ سکتا ہے۔ ایسی صورت میں بھی جائز ہے کیونکہ اسلام کا اصل مقصد طہارت و نظافت ہے۔ جس طرح یہ قائم رہ سکیں وہ طریقہ بہتر ہے لیکن بنیادی اور فطری طریقہ تو بیٹھ کر پیشاب کرنے کا ہے۔ لہٰذا اسی کو عادت بنانا چاہئے۔

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ صراط مستقیم

ص124

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)