فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 13410
(590) عاق نامہ کی اصل صورت
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 21 September 2014 01:44 PM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

عاق نامہ  بو جہ  نا  فر ما نی  کی اصل صورت کیا ہے ؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

عامۃ الناس  کے ہاں "عاق " کرنے کا مفہوم  یہ ہے کہ کسی قریبی  تعلق دار کو نا فر ما نی کی بنا ء  پر وراثت  سے محروم  کردینا  لیکن شر یعت کی نگا ہ  میں اس کی کو ئی  حیثیت نہیں شر ع میں محرومی  ارث  کے اسباب  معروف  ہیں (ناحق  قتل  اختلا ف  دین غلامی ) عاق کرنا ان سے  نہیں لہذا اس بناء  پر کسی  بھی وارث کو وراثت سے محروم  نہیں کیا جا سکتا ۔

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ ثنائیہ مدنیہ

ج1ص865

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)