فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 13361
(541) سچی توبہ کرنا
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 20 September 2014 02:08 PM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

ایک آدمی داڈھی  کا مذاق اڑاتا ہے اور پھر خوب خدا سے تو بہ کر لیتا ہے  کیا اس کی تو بہ قبول  ہو سکتی ہے ؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

داڑھی  کا مذاق اڑانے والے کی تو بہ قبول ہے قصہ افک میں یہ الفا ظ ہیں ۔

«فان العبد اذا اعترف بذنب ثم تاب تاب اللہ عليه»

یعنی "بندہ جب اپنے گنا ہ کا اقرار لر لیتا ہے اللہ سے تو بہ کی درخواست  کرتا ہے تو وہ اس کی تو بہ قبو ل کر لیتا ہے ۔"

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ ثنائیہ مدنیہ

ج1ص822

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)