فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 13332
(512) داڑھی کو رنگنا
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 20 September 2014 09:34 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیا آدمی اپنی داڑھی سفید رکھ سکتا ہے یا کہ وہ کا لی کرے حضرت محمد  صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا :داڑھی کو رنگنا  بہتر ہے سفید داڑھی سے ۔


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

سفید داڑھی رنگنا صرف مستحب ہے واجب نہیں حافظ ابن حجر  رحمۃ اللہ علیہ  فرماتے ہیں ۔

«وحصله ان من جزم انه خضب كما في ظاھر حدیث ام سلمة وكمافي حديث ابن عمر الماضي قريبا انه صلي الله عليه وسلم خضب بالصفرة حكي ماشهده وذلك في بعض الاحيان ومن نفي ذلك كانس فهو محمول علي الاكثر الاغلب من حاله»(فتح الباري 10/345)

(حاصل اس کا یہ ہے کہ بعض دفعہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم  نے زرد رنگ کے ساتھ اپنی  داڑھی کو رنگا ہے جس طرح کہ ام سلمہ اور ابن عمر رضی اللہ تعالیٰ عنہ کی احادیث میں ہے اور اکثر  واغلب احوال میں آپ  صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنی داڑھی  کو اصلی حالت پر چھوڑ اہے جس طرح کہ حضرت انس رضی اللہ تعالیٰ عنہ  کی حدیث میں ہے ( یعنی رنگا نہیں )

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ ثنائیہ مدنیہ

ج1ص806

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)