فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 13323
(503) تعزیت کے آداب و دعا
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 17 September 2014 12:46 PM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

تعزیت  کے آداب و دعاء  بتا ئیں ؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

تعزیت کرنا سنت ہے کیو نکہ اس سے پر یشا ن حال کی دلجوئی ہو تی ہے اور اس کے لیے بھلا ئی  کی دعا بھی ہو نی چاہیے اس میں کو ئی فرق نہیں مرنے والا چھوٹا ہو یا بڑا اور نہ تعزیت کے لیے کو ئی مخصوص الفاظ  ہیں بلکہ منا سب آسان جو بھی  الفاظ  ہو ں ان سے تعز یت ہو سکتی ہے اور نہ اس کے لیے کو ئی وقت یا دن مقرر ہے تعزیت کے لیے مخصوص  ہئیت میں مخصوص دن بیٹھے رہنا سنت سے ثابت نہیں اس سے اجتناب ۔

ضروری ہے صحیح حدیث میں ہے "جو دیں میں اضافہ کر ے وہ مردودہے۔  صحيح البخاري كتاب الصلح باب اذا اصطلحوا علي صلح جور فالصلح مردود (٢٦٩٧)

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ ثنائیہ مدنیہ

ج1ص787

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)