فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 13192
(373) منصوبہ بندی کے لیے مصنوعی طریقہ استعمال کرنا
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 14 September 2014 09:38 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

عمروکی بیوی کے ہاں جب بھی بچہ پیدا ہوتا ہے آپریشن کے ساتھ ہو تا ہے گذشتہ 20یا22ماہ کے عرصہ میں اس کے تین اپریشن ہوچکے  ہیں دوتوبچوں کے لیے جب کہ ایک اپریشن ٹا نگ ٹوٹنے کی بنا ء  پر ہوا اب کی بار بچہ پیدائش  کے بعد لیڈی ڈاکٹر نے سختی سے کہا  کہ آئندہ آپ کے ہاں کم ازکم پانچ سال کا وقفہ انتہائی ضروری ہے بصورت دیگر کیا وقفہ  کے لیے  کو ئی مصنو عی  طریقہ اپنایا جاسکتا ہے ؟اور شرعاًجائز  ہے یا نہیں ؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

صورت ہذا میں اگر عزل کا طریقہ کر لیا جا ئے تو جوا ز ہے اگر چہ کرا ہت  سے خالی نہیں اس کی صورت یہ ہے کہ بوقت انزال پانی باہر ڈال دیا جا ئے یا کو ئی اور ذریعہ  اختیا ر  کیا جا ئے بصورت دیگر  یعنی سرعت انزال وغیرہ کی بناء پر ادویات  کے استعمال کی بھی گنجائش ہے کیوں کہ جان  کا بچانا فرض ہے تا ہم شرط یہ ہے کہ وہ قاطع نسل نہ ہوں بایں وجہ اگر جماع کے وقت محفوظ  مصنوعی آلہ کو اختیار کر لیا جا ئے تو بھی کو ئی حرج معلوم نہیں ہو تا ۔(ہذاماعندی واللہ اعلم)

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ ثنائیہ مدنیہ

ج1ص641

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)