فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 13188
(366) اسلام کا سیاسی پہلو ؟
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 13 September 2014 03:18 PM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

جائے استعجاب ہے کہ بھارتی مسلمان علمائے کرام سیکولر ازم کو اسلام کی حقیقی تعبیر گردانتے ہیں اور مسلمان  عوام کو اس بات کی تلقین کرتے ہیں کہ انتخا بات  میں سیکو لر  جما عتوں  کو ہی ووٹ  دیں  اشکال یہ ہے کہ اسلام کا سیاسی پہلوعالمی ہے یا علا قائی ؟یعنی اس کی تعبیر  اپنے ملک  کے معروضی حالا ت کو پیش نظر رکھ کر کی جا نی چا ہیے  یا تما اقوام عالم پر یکساں اصول لاگو ہوگا ؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

میرے علم میں نہیں کہ آپ کا ادعا حقیقت کے مطابق ہو اسلام اور کفر کی تعبیر کے واضح تفادت میں کسی بھی کلمہ گو کو اختلا ف نہیں ہو سکتا  اس لیے انڈین علمائے  حق پر بد گمانی  کر نا صحیح نہیں ۔ اور جہاں تک سیکولر جماعتوں کو ووٹ ڈالنے کا تعلق ہے سودیا کفر  میں ان کی مجبوری سمجھیں جس طرح کہ ہمارے ہاں بھی اس عمل کی آمیزش مو جو د ہے اللہ رب العزت جملہ مسلمانوں کوراہ حق اختیارکرنے کی تو فیق بخشے ۔آمین!

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ ثنائیہ مدنیہ

ج1ص638

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)