فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 13149
داڑھی کی کم سے کم حد
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 08 September 2014 10:43 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کم سے کم داڑھی کتنی ہونی چاہئے۔کیا ہونٹ کے نیچے اور گردن پر خط بنوا سکتے ہیں ۔؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

داڑھی کو مکمل طور پر چھوڑنا ہی نبی کریم کی سنت ہے۔ہونٹوں کے نیچے سے یا گردن سے بال کاٹنے جائز نہیں ہیں۔ سیدنا ابن عمر رضی اللہ عنہما سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا:

«انْهَكُوا الشَّوَارِبَ، وَأَعْفُوا اللِّحَى»(صحیح بخاری:۲؍۸۷۵،ح:۵۸۹۳)

’’مونچھوں کو ختم کرو اور داڑھیوں کو بڑھاؤ۔‘‘

سیدنا ابن عمر رضی اللہ عنہما سے یہی حدیث ان الفاظ سے بھی مروی ہے:

«خَالِفُوا الْمُشْرِكِينَ أَحْفُوا الشَّوَارِبَ، وَأَوْفُوا اللِّحَى»(صحیح مسلم:۱؍۱۲۹،ح:۵۴؍۲۵۹)

’’مشرکین کی مخالفت کرو،مونچھیں کاٹو اور داڑھیاں بڑھاؤ۔‘‘

مذکورہ بالا احادیث نبویہ سے ثابت ہوتا ہے کہ کم سے کم داڑھی منڈوانا بھی ایک حرام عمل ہے۔اور ہمارے علم میں ایسی کوئی روایت نہیں ہے ،جس میں خط بنوانے یا مٹھ سے زیادہ کاٹنے کی اجازت ہو۔

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتوی کمیٹی

محدث فتوی



تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)