فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 13127
(328) ختم قرآن یا ختم بخاری پر جشن منانا
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 31 August 2014 02:08 PM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

ختم  قرآن  ختم بخا ری  شریف  وغیرہ  یا کسی  کتا ب  کی تکمیل  پر جشن  منا نا  اور کھا نا  کھلا نا  کیسا  ہے ؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

بعض  تفسیروں  میں  لکھا ہے  کہ حضرت عمر  رضی اللہ تعالیٰ عنہ   نے " سورۃ  البقرۃ " ختم  کی تو دس  اونٹ  راہ  اللہ  ذبح  کر  ڈا لے (1)اس سے معلوم ہوا کسی دینی  کتا ب  کے اختتا م پر کھا نا  کھلا نا  یا شرینی  وغیرہ  با نٹ  دی  جا ئے  تو کو ئی ۔حرج  نہیں  کسی  حد تک  یہ شے  طبعی  اور قدرتی  خوشی  میں بھی داخل  ہے  البتہ  اس فعل  کو ضروری  سمجھ  کر اس کا اہتما م  وا لتزام  کر نا سلف سے ثا بت  نہیں ۔(واللہ اعلم )

البيهقي (٢/٣٣١) (١٩٥٧) (الشعب) فصل في تعليم القرآن

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ ثنائیہ مدنیہ

ج1ص611

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)