فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 13087
(288) چاند اور سورج کے گرہن لگنے کو کسی واقع کی طرف منسوب کرنا
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 30 August 2014 04:30 PM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کچھ  لو گو ں  نے سورج  اور چا ند  گر ہن  کے ساتھ  کچھ  واقعات  منسو ب کر رکھے ہیں  کیا شر عاً یہ ٹھیک ہیں ۔


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

شرعاً کو ئی  واقعہ  گہن  میں  مؤثر  نہیں  متعدد  احا دیث  میں ہے ۔

’’ انهما آيتان من آبات الله يخوف الله بهما عباده ’’ صحيح البخاري كتاب الكسوف باب قول النبي صلي الله عليه وسلم «يخوف الله عباده بالكسوف» (1047) و(1048)صحيح مسلم كتاب الكسوف باب صلاة الكسوف (2089الي 2096)

یعنی " سورج  چا ند  اللہ  کی نشا نیوں  میں سے  ہیں  ان  کے ذریعے  اللہ  اپنے  بندوں  کو ڈراتا ہے ۔"

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ ثنائیہ مدنیہ

ج1ص581

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)