فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 13050
(250) مرغ کے اذان دینے پر اسے ذبح کرنا
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 27 August 2014 01:39 PM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

اگر مرغی اذان دے  تو اس کو ذبح کردینا چاہیے۔یہ رجحان عام ہے۔ کیا قرآن وسنت سے ثابت ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

اذان دینے والی مرغی کو ذبح کردینے کا رجحان غلط اور جاہلانہ توہم پرستی پر مبنی ہے۔ ضرورت ہو تو اسے ذبح کرنا بلا تردد جائز ہے۔ممانعت کی کوئی دلیل نہیں محض اذان کی وجہ سے اسے ذبح کردینا جاہلانہ فعل ہے۔شریعت میں اس کا کوئی اصل نہیں پھر جانوروں کی مخصوص اوقات میں بولی پر اذان کا اطلاق عرف عام میں مجازی ہے حقیقتاً نہیں۔جس طرح کے جمعرات کو عامۃ الناس شیاطین سے موسوم کرتے ہیں۔

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ ثنائیہ مدنیہ

ج1ص560

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)