فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 12541
(452) حضرت علی اور عثمان﷢ کے قاتلین سے قصاص
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 19 June 2014 10:36 AM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیا حضرت علی ؓ حضرت عثمان ؓ کے خون کا قصاص لینا چاہتے تھے ۔ اگر ایسا ہی تھا تو آپ نے قاتلین عثمان ؓ کو عہدوں پر فائز کیوں کیا ، نیز حضرت علیؓ  نے سب سے پہلے قاتلین عثمان ؓ سے کیوں بیعت لی؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

صحابہ کرام ؓ کے احترام اور ان سےحسن ظن کا تقاضا یہی ہے کہ حضرت علی ؓ خون عثمان ؓ کا قصاص لینے کا ارادہ رکھتے تھے، باقی رہا قاتلین عثمانؓ کو عہدوں پر فائز کرنے کا معاملہ ، تو اس وقت مصلحتیں درپیش تھیں جن کےپیش نظر حضرت علیؓ کو یہ اقدام کرنا پڑا، یہ بھی معلوم ہونا چاہیے کہ حضرت عثمان ؓ کو شہید کرنے والے باغیوں نے حضرت علیؓ کی از خود بیعت کی تا کہ وہ اس بیعت کی آڑ میں اپنا  بچاؤ کرسکیں ۔ چنانچہ وہ اس طرح اپنے مزعومہ مقاصد  میں کسی حد تک کامیاب بھی رہے۔ بہرحال صحابہ کرام ؓ کےمتعلق ہمیں غیر معمولی حد تک محتاط رہنا چاہیے ۔ کیونکہ اللہ تعالیٰ نے انہیں اپنی مرضی کا مژدہ سنایا ہے۔

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ اصحاب الحدیث

ج2ص446

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)