فتاویٰ جات: علاج ومعالجہ
فتویٰ نمبر : 12000
(5) نظر کا لگنا اور اس کا علاج
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 21 May 2014 04:33 PM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیا انسان کو نظر لگ جاتی ہے،اگر ایسا ہے تو اس کےلیےکیا علاج ہے، اس کےمتعلق تفصیل سے ہمیں آگاہ کریں؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

نظر بد برحق ہےاور اس سے کسی کو نقصان پہنچنا ممکن ہے،شرعی طرر اور حسی طورپر یہ ثابت ہے۔رسول اللہﷺ نے فرمایا کہ ‘‘نظرلگنا برحق ہے اگر کوئی چیز تقدیرسے سبقت کرنے والی ہوتی تو اس سے نظر بد ضرور سبقت کرتی اور جب تم سے دھونے کا مطالبہ کیا جائے تو اس مطالبے کو پورا کرتے ہوئے غسل کردیا کرو۔’’ (صحیح مسلم ،الطب:۲۱۸۸)

اس سےمعلوم ہوا کہ نظر بد کا لگ جانا ایک حقیقت ہے جس سے انکار ممکن نہیں ،حدیث میں ہے کہ حضرت جبرائیل علیہ السلام رسول اللہﷺ کو دم کرتے ہوئے درج ذیل کلمات پڑھا کرتے تھے«باسم اللہ ارقیک من کل شی ءیؤذیک من شر حسد،اللہ یشفیک باسم اللہ ارقیک» (صحیح مسلم ،الطب:۲۱۸۶)

‘‘اللہ کے نام کے ساتھ آپ کو دم کرتا ہوں ہر اس چیز سےجو آپ کو تکلیف دے اورہر انسان کی شرارت حسد کرنے والی آنکھ سے ،اللہ آپ کو شفادے،میں اللہ کے نام سے آپ کو دم کرتا ہوں۔’’

نظر بد کا دوطرح سے علاج ہوتا ہے(۱)جسے نظر بد لگی ہے اسےدم کیاجائے (۲)نظرلگانے والے کو چاہیے کہ خود کو دھوئے ،پھر اس پانی کو مریض پر ڈال دیا جائے،نظر بد سے بچنے کےلیے پیشگی احتیاطی تدابیر بھی کی جاسکتی ہیں ۔ رسول اللہﷺ حضرت حسن اور حضرت حسین ؓ کو مندرجہ ذیل کلمات کےساتھ دم کیا کرتے تھے، اعیذ کمابکلمات اللہ التامۃ من کل شیطان و ھامۃ و من کل عین لامۃ ‘‘میں تمہیں اللہ کے کلمات تامہ کی پناہ میں دیتا ہوں،ہر شیطان اور زہریلی بلاکے ڈر سے اور ہر لگنے والی نظر بد سے ’’(ابن ماجہ،الطب:۳۵۲۵)

 رسول اللہﷺ نے فرمایا کہ ‘‘حضرت ابراہیم علیہ السلام بھی حضرت اسماعیل اور حضرت اسحاق  علیہ السلام کو اسی طرح دم کیا کرتے تھے۔ ’’ (صحیح بخاری ،احادیث الانبیاء:۳۳۷۱)

 الغرض نظر بد برحق ہے اور اس کا علاج ممکن ہے اور اس سے بچنے کےلیے قبل از وقت احتیاطی تدابیر بھی کی جاسکتی ہیں۔

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ اصحاب الحدیث

ج2ص49

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)