فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 11011
(562) السلام علیکم کی بجائے ’’ شام بخیر
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 06 April 2014 12:59 PM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

سلام کہتے ہو ئے بہت سے لوک اس طرح کے الفا ظ کہہ دیتے ہیں ’’ شام بخیر                .......صبح بخیر ....یا اس سے ملتے جلتے الفاظ تو کیا یہ جا ئز ہے ؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

سلام کے لیے جو الفا ظ وارد ہیں وہ یہی ہیں کہ  انسان کہے ’’ السلام علیکم ..یا ’’ سلام علیک ...پھر اس کے بعد جو چا ہے الفا ظ کہہ لے یعنی ’’‏‏مسا ک اللہ با لخیر ... ( اللہ آ پ کی شام اچھی کرے ) اور ’’ صبحک اللہ با لخیر ... (اللہ آپ کی صبح اچھی کرے ) یا اس طرح کے دیگر الفاظ مشروع سلام کے بعد کہے جا ہیں لیکن مشروع سلام کی بجا ئے ان الفاظ کو استعمال  کرنا غلط ہے ۔

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ اسلامیہ

ج4ص427

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)