فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 11001
(557) کسی کو اعرج (انگڑا) کہنا
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 05 April 2014 02:55 PM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کیاکسی انسان کے لیے یہ جائز ہےکہ وہ کسی دوسرے انسان کو اعرج (لنگڑا ) یا اعور (کانا) کہے ؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

اگر اس سےمقصود ! اس انسان کی شناخت ہو تو کوئی حرج نہیں ، بعض روایا ت میں بعض لوگوں کے لیے اعمش اور اعرج  کے نام استعمال کیے گئے ہیں اور اگر یہ از راہ طعن ہو تو پھر جائز نہیں ۔   

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ اسلامیہ

ج4ص425

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)