فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 10996
(552) عاشق اللہ نام رکھنا
شروع از عبد الوحید ساجد بتاریخ : 05 April 2014 02:41 PM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

بہت سے لوگ عا شق اللہ محمد اللہ اور محب اللہ نا م رکھتے ہیں کیا اس طرح کے نام رکھنا جا ئز ہے یا نا جا ئز ہے؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته!
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

عا شق اللہ نا م رکھنا بے ادبی ہے البتہ محمد اللہ اور محب اللہ نا م رکھنے مین کو ئی حرج نہین لیکن افضل یہ ہے کہ اس طرح کے نا م رکھنے کی بجا ئے ایسے نام رکھے جا ئیں جن سے اللہ تعا لی کی طرف عبد یت کی نسبت ہو تی ہو یا بدپھر محمد صالح اور احمد جیسے نا م رکھ لیے جا ئیں۔

ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

فتاویٰ اسلامیہ

ج4ص423

محدث فتویٰ


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)