فتاویٰ جات: متفرقات
فتویٰ نمبر : 108
کھانے پینے کی کوئی چیزباتھ روم لے کر جانا
شروع از بتاریخ : 05 December 2011 01:35 PM
السلام عليكم ورحمة الله وبركاته

کوئی کھانے پینے کی پیک شدہ چیز باتھ روم میں لے جانا کیسا ہے۔؟مثلا بسکٹ کا پیکٹ یا کوئی اور کھانے کی چیز جو کہ پیک ہو۔یا جیب میں پڑی ہو اور باتھ روم جایا جائے تو کیا چیز حرام ہو جاتی ہے۔؟


الجواب بعون الوهاب بشرط صحة السؤال

وعلیکم السلام ورحمة اللہ وبرکاته
الحمد لله، والصلاة والسلام علىٰ رسول الله، أما بعد!

کھانے پینے والی کوئی چیز باتھ روم میں لے جانے سے حرام ہوجانے پر کوئی دلیل نہیں ہے۔ البتہ کھانے پینے کی چیزیں باتھ روم میں عمداً لے جانے سے پرہیز کرنا چاہئے۔

 ھذا ما عندی واللہ اعلم بالصواب

محدث فتوی

فتوی کمیٹی


تبصرہ (0)
[Notice]: Undefined index: irsloading (cache/c62f257fe6ed43eb557019d638a0d780.php:75)